کرونا سرٹیفکیٹ (COVID-19 سرٹیفکیٹ) کے بارے میں

کرونا سرٹیفکٹ نارویجن امیونائزیشن رجسٹری SYSVAK میں رجسٹرڈ آپ کی COVID-19 ویکسینیشن، آپ کے COVID-19 ٹیسٹوں اور ماضی میں آپ کو COVID-19 انفیکشن ہو چکنے کے متعلق درج تفصیلات کا جائزہ فراہم کرتا ہے۔

اس صفحے میں تبدیلیاں کی جا رہی ہیں۔ آخری تبدیلیوں کی تاریخ:16.07.2021

آپ اپنا کرونا سرٹیفکیٹ کیسے حاصل کر سکتے ہیں؟

اگر آپ کے پاس نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر ہے تو آپ helsenorge.no پر لاگ ان کر کے اپنا ڈیجیٹل کرونا سرٹیفکیٹ لے سکتے ہیں۔ لاگ ان کے لیے آپ BankID، موبائل پر BankID، سمارٹ کارڈ پر Buypass ID ، موبائل پر Buypass ID یا Commfides e-ID استعمال کر سکتے ہیں۔ helsenorge.no پر لاگ ان کے طریقے کی مزید تفصیل دیکھیں۔

آپ اپنے کرونا سرٹیفکیٹ میں کیا دیکھ سکتے ہیں؟

 کرونا سرٹیفکیٹ اس بارے میں معلومات دکھاتا ہے:

  • آپ کی آخری رجسٹرڈ COVID-19  ویکسینیشنر
  • *پچھلے چھ مہینوں میں COVID-19 سے آپ کی شفایابی
  • آپ کے COVID-19 ٹیسٹ کے حالیہ منفی نتائج

یہ آپ کی ذاتی تفصیلات ہیں جو آپ چاہیں تو دوسرے لوگوں کو دکھا سکتے ہیں۔ اس سرٹیفکیٹ میں آپ QR کوڈز کے ساتھ کنٹرول کے صفحات (چیک کیے جانے والے صفحات) استعمال کر سکیں گے۔

ہر بار جب آپ سسٹم سے اپنا کرونا سرٹیفکیٹ نکالیں گے تو اس کے مؤثر رہنے کی تاریخ خود بخود تازہ ہو جائے گی۔ یہ معلومات نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ سے حاصل کی جاتی ہیں اور Helsenorge ان معلومات کو اپنے پاس نہیں رکھتا۔

آپ اپنا ڈیجیٹل کرونا سرٹیفکیٹ اپنے موبائل فون یا ٹیبلٹ میں ڈاؤن لوڈ کر سکتے ہیں۔ اگر آپ کے پاس سرٹیفکیٹ ڈیجیٹل صورت میں ہو تو اسے پرنٹ کرنا ضروری نہیں ہے۔ اگر پھر بھی آپ پرنٹ کیا ہوا سرٹیفکیٹ رکھنا چاہتے ہوں تو براہ مہربانی خود پرنٹ کر لیں۔

*COVID-19 بیماری ہو چکنے کا قابل قبول ثبوت منظور شدہ PCR ٹیسٹ، اینٹیجن ٹیسٹ یا اینٹی باڈی ٹیسٹ (اینٹی باڈی ایکسپریس ٹیسٹ نہیں) ہے۔ اگر آپ کو COVID-19 بیماری ہو چکی ہے یا آپ کو یہ بیماری رہ چکنے کا شبہ ہے لیکن آپ کے پاس اس کا قابل قبول ثبوت نہیں ہے تو آپ بعد میں ایسی مائیکروبائیولوجیکل لیبارٹری میں اینٹی باڈی سیرالوجی (اینٹی باڈی ایکسپریس ٹیسٹ نہیں) کروا سکتے ہیں جو MSIS لیب ڈیٹابیس کو رپورٹنگ کرتی ہے۔ پہلے کسی اور ملک میں ثابت ہو چکنے والی کرونا وائرس بیماری کے ٹیسٹ کا نتیجہ MSIS میں رجسٹر کروانا ممکن نہیں ہے۔ انفیکشن اور ویکسینیشن کی 1 ڈوز کے کامبینیشن کی بنیاد پر مؤثر کرونا سرٹیفکیٹ ملنے کے لیے ضروری ہے کہ اینٹی باڈی ٹیسٹ زیادہ سے زیادہ ویکسینیشن والے دن پر کروایا گیا ہو۔ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ انفیکشن کا شبہ کتنا عرصہ پہلے پایا گیا تھا بشرطیکہ اس کو کم از کم 3 مہینے گزر چکے ہوں۔ آپ ٹیسٹوں کے نتائج کے تحت 19 بیماری ہو چکنے کا ثبوت حاصل کر سکتے ہیں۔

ناروے، یورپیئن یونین اور یورپیئن اکنامک ایریا میں استعمال کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ

کرونا سرٹیفکیٹ میں QR کوڈز  کے ساتھ کنٹرول کے صفحات ہوتے ہیں۔ یورپیئن یونین/یورپیئن اکنامک ایریا میں سرحدیں پار کرتے ہوئے، سرحد پار سے ناروے میں داخل ہوتے ہوئے، ناروے میں اندرون ملک استعمال کے لیے یا جن دوسرے حالات میں ان معلومات کی ضرورت ہو، آپ سے یہ صفحات دکھانے کو کہا جا سکتا ہے۔

کرونا سرٹیفکیٹ میں دو مختلف کنٹرول کے صفحات ہیں:

  • ناروے کے لیے کنٹرول کے صفحے سے پتہ چلتا ہے کہ آیا یہ سرٹیفکیٹ قومی اصولوں کے تحت ہونے والے پروگراموں کے لیے مؤثر ہے۔ اس بارے میں مزید معلومات لیں: ناروے میں کس وجہ سے سبز کرونا سرٹیفکیٹ یا سرخ کرونا سرٹیفکیٹ ملتا ہے۔
  • یورپیئن یونین/یورپیئن اکنامک ایریا کے لیے کنٹرول کا صفحہ سرحد پار کرنے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔ آپ جس ملک میں موجود ہوں، یہ اس کے اصولوں کی بنیاد پر طے ہوتا ہے کہ آيا یہ سرٹیفکیٹ مؤثر ہے۔ آپ Re-open EU پر اس کی تفصیل دیکھ سکتے ہیں۔

ناروے میں بڑے پروگراموں میں شرکت کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ

24 گھنٹوں سے کم پرانا ٹیسٹ کا منفی نتیجہ یا محفوظ شخص کی حیثیت آپ کو سبز کرونا سرٹیفکیٹ دلاتی ہے۔ آپ محفوظ تب ہوتے ہیں جب آپ کی ویکسینیشن مکمل ہو، آپ کو ویکسین کی پہلی ڈوز لگے ہوئے 3 سے 14 ہفتے گزر چکے ہوں یا آپ پچھلے چھ مہینوں کے دوران کرونا وائرس کی بیماری سے شفایاب ہو چکے ہوں۔

کانسرٹ، تھیٹر، فٹ بال میچ اور میلے وغیرہ میں شرکت کے ساتھ ساتھ ملک کے اندر بحری سفر کے لیے بھی کرونا سرٹیفکیٹ کو استعمال کرنا ممکن ہو گا۔

اگر آپ کو سبز کرونا سرٹیفکیٹ لینے کے لیے ٹیسٹ کروانے کی ضرورت ہو تو آپ کو پروگرام یا بحری سفر کے منتظم یا ٹیسٹ فراہم کرنے والے سے یہ واضح معلومات ملیں گی کہ آپ کو کہاں ٹیسٹ کروانا ہو گا۔ یہ ایکسپریس اینٹیجن ٹیسٹ ہونا چاہیے اور یہ ٹیسٹ مفت ہوتا ہے۔ آپ کو یہ یقینی بنانا ہو گا کہ آپ خود بروقت ٹیسٹ کروائیں۔

اس بارے میں مزید معلومات لیں کہ آپ کو اپنا سبز کرونا سرٹیفکیٹ دکھا کر شرکت کر پانے کے لیے پروگرام سے پہلے کیا کرنے کی ضرورت ہے

یورپیئن یونین اور یورپیئن اکنامک ایریا میں استعمال کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ

1 جولائی سے یورپیئن یونین  کاڈیجیٹل کرونا سرٹیفکیٹ مؤثر ہو جائے گا۔ یورپیئن یونین/یورپیئن اکنامک ایریا کے اکثر ممالک تب EUDCC گیٹ وے سے منسلک ہو جائیں گے اور اپنی سرحدوں پر نارویجن کرونا سرٹیفکیٹ کی توثیق کر سکیں گے۔

اگر آپ بیرون ملک سفر کا فیصلہ کریں تو آپ اپنی منزل کے ملک میں کوارنٹین، ٹیسٹنگ اور انفیکشن کنٹرول کے تقاضوں سے آگہی حاصل کرنے کے لیے ذمہ دار ہیں۔ مختلف ممالک میں یہ تقاضے مختلف ہوں گے۔

Re-open EU پر یہ تفصیل موجود ہے کہ یورپیئن یونین/یورپیئن اکنامک ایریا کے مختلف ممالک میں کونسے اقدامات واجب ہیں۔

 یہ بھی دیکھیں: ناروے کرونا سرٹیفکیٹس کے لیے یورپیئن یونین کے نظام کا حصہ بن رہا ہے (government.no)

ناروے کی سرحد پر استعمال کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ

اگر آپ کی ویکسینیشن مکمل ہے یا آپ پچھلے چھ مہینوں میں کرونا وائرس کی بیماری سے شفایاب ہو چکے ہیں اور آپ ایسا قابل توثیق کرونا سرٹیفکیٹ دکھا کر اس کا ثبوت دے سکتے ہیں جو EUDCC گیٹ وے سے منسلک ہے تو آپ آزادانہ ناروے میں داخل ہو سکیں گے چاہے آپ کسی بھی ملک سے آ رہے ہوں۔

آپ کو لازمی کوارنٹین، آمد سے پہلے ٹیسٹنگ، سرحد پر ٹیسٹنگ اور داخلے کی رجسٹریشن کے تقاضوں سے استثنا بھی حاصل ہو گا۔

تمام شہریوں کے لیے ناروے میں داخلے کے اصولوں کے متعلق نارویجن ڈائریکٹوریٹ آف امیگریشن (UDI) دیکھیں۔

کرونا سرٹیفکیٹ میں سبز یا سرخ روشنی دلانے والے اصول

کرونا سرٹیفکیٹ سے پتہ چلتا ہے کہ آيا حال ہی میں آپ کے ٹیسٹ کا منفی نتیجہ آيا ہے، آيا آپ کی ویکسینیشن ہو چکی ہے یا آیا آپ کرونا وائرس کی بیماری کے بعد مدافعت پیدا کر چکے ہیں۔ کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے مختلف اصول بنائے گئے ہیں جن سے طے ہوتا ہے کہ آيا آپ کے نارویجن کرونا سرٹیفکیٹ میں کنٹرول کے صفحے کا رنگ سبز ہو گا یا سرخ۔

سبز اور سرخ سرٹیفکیٹ صرف ناروے کے اندر استعمال کے لیے ہیں جبکہ اضافی کنٹرول کے صفحے کو ناروے میں داخل ہوتے ہوئے اور دوسرے یورپیئن ممالک کا سفر کرتے ہوئے چیک کیا جائے گا۔

ان اصولوں کی بنیاد پر طے ہوتا ہے کہ آيا ناروے میں آپ کے کرونا سرٹیفکیٹ میں سبز روشنی ہو گی یا سرخ:

کرونا سرٹیفکیٹ میں سبز یا سرخ روشنی دلانے والے اصول

سرٹیفکیٹ کا مؤثر ہونا

اگر اصولوں میں طے تین معاملات (ویکسینیشن، مدافعت اور ٹیسٹ کا منفی نتیجہ) میں سے کسی ایک کے تقاضے پورے پائے جائیں تو آپ کے لیے کنٹرول کا صفحہ سبز ہو گا۔ اگر ان میں سے ایک سے زیادہ معاملے میں تقاضے پورے ہونے کے سبب آپ کے لیے کنٹرول کا صفحہ سبز ہو تو وہ معاملہ اطلاق پائے گا جس کے سبب سرٹیفکیٹ کی سب سے زیادہ مدت میسّر آتی ہے۔ مؤثر سرٹیفکیٹ (کنٹرول کا سبز صفحہ) دلانے والے معاملات اور سرٹیفکیٹ کے مؤثر (ٹیکنیکل لحاظ سے مؤثر) رہنے کے عرصے کے درمیان فرق ہے۔

کرونا سرٹیفکیٹ کو ڈاؤن لوڈ کیا جا سکتا ہے اور اسے انٹرنیٹ کے بغیر استعمال کیا جا سکتا ہے یا پرنٹ کر کے کاغذی شکل میں استعمال کیا جا سکتا ہے۔ اگر سرٹیفکیٹ کو اس طرح استعمال کیا جائے تو ڈاؤن لوڈ یا پرنٹ کرنے کی تاریخ سے لے کر استعمال کے لیے 90 دن حاصل ہوتے ہیں۔ اگرچہ ویکسینیشن مکمل ہونے یا آپ کے محفوظ ہونے کی حیثیت 90 دن سے زیادہ برقرار رہتی ہے، اس کے باوجود 90 دن بعد آپ کو دوبارہ سرٹیفکیٹ ڈاؤن لوڈ یا پرنٹ کرنا ہو گا تاکہ آپ کے پاس نیا مؤثر سرٹیفکیٹ آ جائے۔

اگر آپ سرٹیفکیٹ کو ایپ پر استعمال کریں اور انٹرنیٹ سے کنیکٹ ہوں تو اس کی ایکسپائری (اختتام) کی تاریخ اگلے 90 دن بعد تک کی نظر آئے گی۔

اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ "محفوظ" یا "ویکسینیشن مکمل کرنے والے" افراد صرف 90 دن کے لیے محفوظ ہوتے ہیں۔

کرونا سرٹیفکیٹ کے صرف اگلے 90 دن تک مؤثر رہنے کی وجہ یہ ہے کہ اس کے غلط استعمال کو روکا جائے اور یہ یقینی بنایا جائے کہ تمام سرٹیفکیٹس اس علم کے مطابق درست ہیں جو ہمیں کسی بھی وقت وائرس، مدافعت اور ویکسینز کے متعلق حاصل ہو۔

ڈیجیٹل آلات استعمال نہ کرنے والوں کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ

اگر آپ سمارٹ فون، کمپیوٹر یا ٹیبلٹ استعمال نہیں کر سکتے تو آپ ڈاک میں کرونا سرٹیفکیٹ منگوا سکتے ہیں۔ آپ کرونا انفارمیشن فون لائن کو کال کر کے بھی کاغذ پر چھپا کرونا سرٹیفیکٹ ڈاک میں منگوا سکتے ہیں۔ ذہن میں رکھیں کہ صرف وہ شخص فون کر کے مدد مانگ سکتا ہے جسے اپنا سرٹیفکیٹ درکار ہے۔

پھر بھی چونکہ بہت سے لوگ رابطہ کر رہے ہیں، مشورہ دیا جاتا ہے کہ وہ سب لوگ جو ڈیجیٹل حل استعمال کر سکتے ہیں، یہی استعمال کریں تاکہ ہم ان باقی لوگوں کو مدد دے سکیں جن کے لیے ڈیجیٹل حل استعمال کرنا ممکن نہیں ہے۔ ڈیجیٹل سرٹیفکیٹ کے ساتھ یہ بھی ممکن ہے کہ سرٹیفکیٹ کو کاغذ پر پرنٹ کر لیا جائے۔

ڈاک میں سرٹیفکیٹ منگوانا

ڈاک میں کرونا سرٹیفکیٹ منگوانے کے لیے آپ کے پاس نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر ہونا ضروری ہے۔ یہ ان لوگوں کے لیے درکار ہے:

  • وہ افراد جن کا کوئی قانونی سرپرست ہو۔ قانونی سرپرست اس فرد کی طرف سے سرٹیفکیٹ کی درخواست کر سکتا ہے بشرطیکہ Helfo کی رجسٹری میں یہ قانونی سرپرستی درج ہو۔
  • وہ افراد جو ناروے میں رہتے ہیں لیکن جن کا پتہ پبلک رجسٹری میں درج نہیں ہے۔
  • وہ افراد جو ناروے سے باہر رہتے ہیں لیکن جن کا پتہ پبلک رجسٹری میں درج نہیں ہے۔
  • وہ افراد جو خود Helfo کو فون کر کے سرٹیفکیٹ طلب نہیں کر سکتے۔

آپ کو خط میں کیا لکھنا چاہیے؟

آپ کے خط میں ذکر ہونا چاہیے کہ آپ کرونا سرٹیفکیٹ منگوانا چاہتے ہیں اور یہ بھی لکھا ہونا چاہیے:

  • نام، نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر، وہ پتہ جہاں آپ ٹھہرے ہوئے ہیں اور وہ پتہ بھی جہاں سرٹیفکیٹ بھیجا جائے
  • قابل قبول شناخت نامے کی کاپی (پاسپورٹ، نارویجن ڈرائیونگ لائسنس یا شناختی کارڈ)

آپ ضروری معلومات فراہم کرنے کے لیے یہ فارم استعمال کر سکتے ہیں:

ڈیجیٹل آلات استعمال نہ کرنے والوں کے لیے کرونا سرٹیفکیٹ منگوانے کا طریقہ (PDF, bokmål)

آپ یہ خط کہاں بھیجیں گے؟

خط اور شناخت نامے کی کاپی اس پتے پر بھیجیں:

Helfo
Postboks 2415
3104 Tønsberg

اگر آپ کا قابل قبول کرونا سرٹیفکیٹ موجود ہو تو یہ آپ کو بذریعہ ڈاک بھیج دیا جائے گا۔ ڈیجیٹل میل باکس میں کرونا سرٹیفکیٹ منگوانا ممکن نہیں ہے۔ اگر آپ کے خط میں کوئی کمی یا غلطی ہوئی توHelfo  کرونا سرٹیفکیٹ نہیں بھیج سکے گا۔

بالعموم کرونا سرٹیفکیٹ پہنچنے میں 1 سے 2 ہفتے لگتے ہیں۔

فون پر سرٹیفکیٹ منگوانا

  1. اپنا نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر سامنے رکھ لیں
  2. کرونا انفارمیشن ہیلپ لائن کو فون کریں (آپریٹر نارویجن، انگلش، عربی، صومالی، پولش اور اردو زبانوں میں جواب دے سکتے ہیں):
  • فون لائن کھلنے کے اوقات پیر تا جمعہ صبح00 بجے سے دوپہر 3.30 بجے تک ہیں۔
  • ناروے سے فون کرنے والوں کے لیے نمبر: 815 55 015
  • بیرون ناروے سے فون کرنے والوں کے لیے نمبر: +47 21 89 80 42

کیس آفیسر آپ سے نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر، اپنا نام اور رجسٹرڈ پتہ بتانے کو کہے گا۔ اگر آپ ایسا نام اور پتہ بتائیں جو آپ کے رجسٹرڈ پتے سے نہ ملتا ہو تو ہمیں افسوس ہے کہ آپ کو کرونا سرٹیفکیٹ نہیں ملے گا۔ اس صورت میں آپ کو نارویجن پبلک رجسٹری(folkeregisteret)  سے رابطہ کر کے معلوم کرنا ہو گا کہ آپ کے متعلق کیا تفصیلات رجسٹرڈ ہیں۔

اگر آپ کا مؤثر کرونا سرٹیفکیٹ دستیاب ہو تو یہ آپ کو بذریعہ ڈاک بھیج دیا جائے گا۔

براہ مہربانی ذہن میں رکھیں کہ آپ کو سرٹیفکیٹ ملنے میں ایک ہفتہ لگ سکتا ہے۔ اس لیے آپ کو کرونا وائرس ٹیسٹ کے منفی نتیجے کی بنیاد پر کرونا سرٹیفکیٹ نہیں بھیجا جائے گا کیونکہ ٹیسٹ کا نتیجہ صرف 24 گھنٹوں تک قابل قبول ہے۔

ذہن میں رکھیں کہ سرٹیفکیٹ پرنٹ کیے جانے کی تاریخ سے لے کر یہ 90 دن تک مؤثر ہے۔

کیا آپ ناروے سے باہر رہتے ہیں؟

اگر آپ ناروے سے باہر رہتے ہیں اور آپ کے پاس نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر ہے لیکن bankID یا اپنی شناخت ثابت کرنے کا کوئی اور طریقہ نہیں ہے جس سے آپ helsenorge.no استعمال کر سکیں تو آپ اوپر لکھا وہ طریقہ استعمال کر سکتے ہیں جو ڈیجیٹل آلات استعمال نہ کرنے والوں کے لیے ہے۔ اس کے لیے ضروری ہے کہ آپ کا بیرون ناروے پتہ پبلک رجسٹری میں درج ہو۔

کیا آپ helsenorge.no استعمال نہیں کر سکتے؟

اگر آپ helsenorge.no  استعمال نہیں کر سکتے تو آپ کسی اور کو مختارنامہ بھی دے سکتے ہیں (PDF) کہ وہ آپ کا کرونا سرٹیفکیٹ پرنٹ کر دے۔ مختار نامے پر کارروائی کا وقت کم از کم 30 دن ہے۔ ذہن میں رکھیں کہ مختار نامہ پانے والا شخص صحت کی دوسری تفصیلات بھی دیکھ سکتا ہے جو helsenorge.no پر صحت کی دوسری ڈیجیٹل خدمات میں دستیاب ہیں۔

کیا آپ کے کرونا سرٹیفکیٹ میں لکھی تاریخ پیدائش پاسپورٹ میں لکھی تاریخ پیدائش سے مختلف ہے؟

کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے تاریخ پیدائش نیشنل پبلک رجسٹری سے حاصل کی جاتی ہے۔ کچھ لوگوں کو ایسا D نمبر ملا ہوا ہے جس میں ان کی اصل تاریخ پیدائش شامل نہیں ہے۔

اگر آپ ایسا غیر ملکی پاسپورٹ استعمال کر رہے ہیں جس پر کوئی مختلف تاریخ پیدائش لکھی ہے تو آپ نارویجن ٹیکس ایڈمنسٹریشن سے رابطہ کر کے اس مسئلے کی وضاحت کرنے والی تصدیق مانگ سکتے ہیں۔

آپ یہ بھی دیکھ سکتے ہیں کہ نیشنل پبلک رجسٹری میں درج تاریخ پیدائش بدلوانے کی درخواست کیسے دی جائے۔

کیا آپ کے کرونا سرٹیفکیٹ میں آپ کی ویکسین یا ٹیسٹوں کی تفصیلات نہیں دیکھی جا سکتیں؟

 ویکسین کی تفصیلات نہیں دیکھی جا سکتیں

کرونا سرٹیفکیٹ ویکسینیشنز کے متعلق معلومات نارویجن امیونائزیشن رجسٹری SYSVAK سے حاصل کرتا ہے۔ سرٹیفکیٹ پر صرف سب سے تازہ ویکسینیشن نظر آتی ہے؛ پچھلی ویکسینیشنز ویکسینیشن کے صفحے پر دکھائی جاتی ہیں۔ اگر آپ اپنی تازہ کرونا ویکسینیشن نہ دیکھ سکتے ہوں تو غالباً یہ رجسٹر نہیں ہوئی ہے۔

آپ کو ویکسین لگنے کے بعد اس کے SYSVAK میں رجسٹر ہونے میں کچھ وقت لگ سکتا ہے۔ اگر آپ کی ویکسینیشن دکھائی نہ دے تو آپ اس مرکز سے رابطہ کر سکتے ہیں جہاں آپ کو ویکسین لگی تھی تاکہ مرکز اسے رجسٹر کروائے۔

کیا آپ کا کرونا وائرس ٹیسٹ دکھائی نہیں دیتا

کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے ٹیسٹوں کے نتیجوں کی تفصیلات MSIS لیبارٹری کی ڈاٹابیس سے حاصل کی جاتی ہیں۔ اس خلاصے میں وہ سب سے نئے  ٹیسٹ دکھائے جاتے ہیں جو پچھلے سات دنوں میں آپ کے لیے رجسٹر ہوئے تھے۔ اگر کرونا وائرس دریافت نہ ہوا ہو تو آپ کو صرف سب سے آخری ٹیسٹ نظر آئے گا۔

اگر حال ہی میں آپ کو کرونا وائرس بیماری تشخیص ہوئی ہے تو آپ کا سب سے آخری ٹیسٹ پوشیدہ ہو سکتا ہے۔ اس صورت میں بالعموم آپ کو چند دن انتظار کرنے کے بعد ہی کرونا وائرس ٹیسٹ کا ایسا نتیجہ نظر آئے گا جس سے آپ کو کرونا وائرس بیماری ہونے کی نشاندہی نہ ہو۔

ٹیسٹوں کے نتائج کے صفحے پر آپ وہ سب کرونا وائرس ٹیسٹ دیکھ سکیں گے جو آپ نے کروائے ہوں۔ اگر آپ کا ٹیسٹ اس صفحے پر نہ ہو تو شاید یہ ٹیسٹ رجسٹر نہیں ہوا ہے۔ اس صورت میں آپ ٹیسٹنگ سنٹر سے رابطہ کر کے پوچھ سکتے ہیں کہ کیا انہوں نے آپ کے ٹیسٹ کا نتیجہ رجسٹر کیا ہے۔

کیا آپ کو کرونا وائرس انفیکشن ہو چکا ہے لیکن آپ اس بارے میں معلومات نہیں دیکھ سکتے؟

کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے ٹیسٹوں کے نتائج کی تفصیلات MSIS لیبارٹری کی ڈاٹابیس سے حاصل کی جاتی ہیں۔ اگر پچھلے چھ مہینوں میں آپ کو کرونا وائرس انفیکشن ہو چکا ہے تو بالعموم آپ محفوظ ہوں گے۔ کرونا وائرس انفیکشن دریافت کرنے والے پہلے ٹیسٹ کی تاریخ سے لے کر چھ مہینوں تک آپ کے سرٹیفکیٹ پر یہ نظر آتا رہے گا۔

ہمیں افسوس ہے کہ ہم کچھ لوگوں کا محفوظ ہونا ظاہر نہیں کر سکتے۔ مثال کے طور پر یہ تب ہو سکتا ہے کہ آپ کے پچھلے کرونا وائرس ٹیسٹ کے نتیجے آٹومیٹک طور پر نہیں پڑھے جا سکتے تھے۔

دوسرے ممالک میں کرونا وائرس سے شفایابی کا ثبوت MSIS میں رجسٹر نہیں کیا جا سکتا۔

ناروے سے باہر لگنے والی کرونا وائرس ویکسینز کی بعد میں رجسٹریشن

دوسرے ممالک میں لگنے والی کرونا وائرس ویکسینیشن کو نارویجن امیونائزیشن رجسٹری SYSVAK میں درج کرنا تب ممکن ہے جب اس کا قابل اعتبار تحریری ثبوت مہیا ہو۔ نارویجن انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کا مشورہ ہے کہ صرف یورپیئن میڈیسنز ایجنسی (EMA) کی منظور کردہ ویکسینز کو SYSVAK میں رجسٹر کیا جائے۔ یہ اصول اس سے قطع نظر لاگو ہوتا ہے کہ دنیا کے کس حصے میں ویکسین کی ڈوزیں لگائی گئی تھیں۔

EMA کی منظور کردہ ویکسینز Pfizer، Moderna،Astrazeneca  اور Johnson & Johnson ہیں۔

اپنی ویکسینیشن رجسٹر کروانے کے لیے آپ کے پاس نارویجن شناختی نمبر یا D نمبر ہونا بھی ضروری ہے۔

ویکسینیشن کا ثبوت دینے کے لیے کس سے رابطہ کیا جائے؟

یہ معلومات آپ کے ناروے کا سفر کرنے سے پہلے رجسٹر کروائی جا سکتی ہیں۔ اپنی ناروے سے باہر ہونے والی ویکسینیشن کا ثبوت دینے کے لیے آپ کو ان میں سے کسی سے اپائنٹمنٹ کرنی ہو گی:

یہ آن لائن/وڈیو اپائنٹمنٹ ہو سکتی ہے جس میں ڈاکٹر کو ویکسین کا ثبوت دکھایا جائے اور ڈاکٹر اپنی صوابدید سے فیصلہ کرے کہ آيا اسے ثبوت کے طور پر منظور کیا جا سکتا ہے یا نہیں۔

آپ کو کس ثبوت کی ضرورت ہو گی؟

  • یورپیئن یونین/یورپیئن اکنامک ایریا میں جاری کردہ کرونا سرٹیفکیٹ، یا
  • ویکسینیشن کا تحریری ثبوت

آپ کو ویکسینیشن رجسٹریشن کے لیے اس اپائنٹمنٹ کی فیس ادا کرنی ہو گی۔ اگر یہ اپائنٹمنٹ آپ کے ڈاکٹر کے ساتھ تھی تو آپ کو پوری فیس ادا کرنی ہو گی کیونکہ یہ رعایتی فیس دلانے کے نظام کے تحت نہیں آتی۔

ناروے کے کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے پرائیویسی پالیسی

کرونا سرٹیفکیٹ آپ کی کرونا وائرس ویکسینیشنز، کرونا وائرس کے ٹیسٹ اور ماضی میں کرونا وائرس انفیکشن ہو چکنے کی تفصیلات مہیا کرتا ہے۔ یہ آپ کی ذاتی تفصیلات ہیں جو آپ چاہیں تو دوسرے لوگوں کو دکھا سکتے ہیں۔ ناروے کے کرونا سرٹیفکیٹ کے لیے نارویجن انسٹی ٹیوٹ آف پبلک ہیلتھ کی پرائیویسی پالیسی میں اس کے مقصد اور استعمال کے بارے میں مزید معلومات لیں۔